نظر میں جتنے ،فلک پہ ستارے ہیں جاناں
تری محبت میں چمکیں تو پیارے ہیں جاناں
کہانیاں جو محبت کی ہیں وہ تم سے ہیں
فسانے وہ تم سے ہیں جو ہمارے ہیں جاناں
ہمارے پاس جو کچھ ہے وہ سب تمہارا ہے
یہ دل تمہارا ہے، ہم بھی تمہارے ہیں جاناں
وصال کا تم سے کیسے عہد کریں ، کہ ہم
ابھی تو خود ہجر کے ہاتھوں ہارے ہیں جاناں
تمہاری یاد اور مری بے بسی کے قصے ہیں
جو لفظ کاغذ پہ دل سے اتارے ہیں جاناں