یہ دِکھاوے کا پیار، کتنے دن؟
دوست یہ کاروبار، کتنے دن؟

یہ جو انکار کرتے رہتے ہو
اِس طرح میرے یار، کتنے دن؟

ہم نے مانا کہ خونصورت ہو
جانِ جاں یہ بہار، کتنے دن؟

سوچتا ہوں کہ ہم غریبوں پر
یہ تیرا اِختیار، کتنے دن؟

تجھ کو تو بُھولنے کی عادت ہے
پھر تیرا اعتبار، کتنے دن؟