تو نے تو زندگی چھوڑ ہی دیا
موت سے خوب نباہ کی میں نے
آئے جب تم یادقبر میں مجھے
رات خود اپنی تباہ کی میں نے
قطعہ: رابعہ اقبال رابی