قطعہ


 


چلتی ہوئی ہوائیں،جاتے ہوئے لمحے
قید کرنا بھی چاہیں،قید ہو نہیں سکتے
گذر جاتے ہیں لمحے،رک جاتی ہیں ہوائیں
وقت ریت کی طرح ہاتھوں سے پھسلا جاتا ہے


رابعہ اقبال رابی