Name:  12991068_1167371959948839_1794959646130682787_n.jpg
Views: 843
Size:  46.2 KB

میرے پاکستانیوں!!!!!
تاریخ بدل رهی هے.......بدلی جا رهی هے...... بدل کے رهے گی....
آج عمران خان نے قوم سے خطاب کا فیصله کیوں کیا اور ptv کو ھنگامی مراسله کیوں بھیجا گیا..
یه خبر سن کر مجھے قطعی طور پر یه توقع نهیں که حکومت عمران خان کو ptv پر خطاب کرنے دے گی لیکن میں پوچھتا هوں که عمران خان کو قوم سے خطاب اور وه بھی ptv پر کرنے کی ضرورت کیوں پیش آئی... عمران خان وه شخص هے که پوری دنیا میں جھاں جاتے هیں میڈیا چینلز اپنی ریٹنگ بڑھانے کے لئے عمران خان کے گرد گھومتے هے اور ملکی و غیر ملکی میڈیا پرسنز کی ھر ممکن کوشش هوتی هے که کسی بھی طرح سے وه عمران خان کی توجه حاصل کرنے میں کامیاب هو سکے. عمران نے حال هی میں انڈیا کے دو دورے کئے اور دونوں بار انڈیا کے ٹی وی چینلز نے عمران کے لائیو انٹر ویوز نشر کئے کیوں ????? اپنی ریٹنگ بڑھانے کی خاطر...
آج بھی آپ یو ٹیوب په جا کے دھرنے کے دوران حامد میر کے بیانات دیکھ سکتے هیں جب عمران خان نےgeo کابائیکاٹ کیا تھا تو حامد میر کے زبانی میں نے سنا تھا که ھمیں تنخواهیں دینے کے لئے ادارے کے پاس پیسے نهیں اور اداره دیوالیه هونے لگا هے.. کیا تھا???
حکومت اور تمام اپوزیشن پارٹیز جیو کے ساتھ تھی لیکن عمران خان کی وجه سے ریٹنگ اتنی گر گئی تھیں که کوئی اشتھار دینے کے لئے تیار نه تھا اور ٹی وی مالک کی ھدایت په فری اشتھار نشر کئے جارهے تھے صرف یه تاثر دینے کے لئے که ھم په کوئی اثر نهیں پڑتا لیکن بلاآخر منتیں کرکے عمران خان سےصلح کی اور پارٹی لیڈرز کو اجازت ملی. اور وه شخص آج ptv کو خطاب نشر کرنے کے لئے خط لکھ رھا هے... کیوں..???
میرے پاکستانیوں آپ کو صرف یه بتانے کے لئے که آپ جس بھی پارٹی سے تعلق رکھتے هو آپ جو کوئی بھی هو پاکستان کے تمام اداروں په ھر شھری کا برابر حق هے اور اگر حکومتی ارکان ptv په اپنی پارٹی کی تشھیر کر سکتے هیں یا اپوزیشن جماعتوں په الزامات لگا سکتے هیں تو اپوزیشن کو یه چینل استعمال کرنے کا حق کیوں نهیں... اور نتیجه کیا نکلے گا....
اجازت دے تب بھی فائده نه دے تب بھی فائده....
اجازت ملی تو یه اداره بھی آزاد هوجائیگا اور پوری قوم کو حقائق کا پته بھی لگ جائیگا حکومتی کرپشن سے بھی عام شھریوں کو آگاه کر دیا جائیگا اور اجازت نه دی تب بھی قوم کو پته چل جائیگا که حکمران تمام ملکی و قومی اداروں کو اپنی جاگیر سمجھ کر استعمال کرتے هیں جو کسی جمھوری ملک میں نهیں هوتا... اور پھر عدالت میں فیصله چیلنج هوگا اور عدالت کو هی اجازت دلانی ھوگی...... اور تاریخ بدلے گی...
شہباز بھٹی پاکستان