Name:  Pakistan-Tehreek-e-Insaf-PTI-Official-Logo.png
Views: 219
Size:  174.6 KB


It has been reported that some people are entering fake ID numbers and getting membership numbers from 90088.
Such people are informed that all data is sent to 8300 for verification. Membership of those numbers which are not verified by ECP will be blocked and those cell numbers will not be usable for genuine membership also.
پاکستان تحر یک انصا ف کے چیف الیکشن کمشنر تسنیم نورانی کی زیرِصدارت تحریک انصاف کی ممبرشپ کے حوالے سے اہم اجلاس چیئرمین سیکرٹریٹ لاہور میں منعقد ہوا، اجلاس میں تحریک انصاف کی ممبر شپ کے دوران ہونے والی بے قاعدگیوں کا جائز ہ لیا گیا،اجلاس میں صوبائی الیکشن کمشنر کرنل (ر) اعجازمنہاس سمیت دیگرممبران بھی موجودتھے، اجلاس سے خطاب کے دوران ان کا کہناتھا کہ کئی لوگ ایک شناختی کارڈ پر پانچ سموں کی پالیسی کا غلط استعمال کررہے ہیں ایسا کرنے والوں پر یہ واضع ہو جانا چاہئے کہ پی ٹی آئی الیکشن کمیشن ابھی عبوری لسٹ تیار کررہا ہے جو لوگ ممبر شپ لے رہے ہیں ان کے کوائف ہمارے پاس الیکشن کمیشن آف پاکستان کی ووٹرلسٹ کے ذریعے سے موجود ہیں ، انہوں نے کہاکہ عبوری ووٹر لسٹ میں موجود ممبران کو فون کالز سمیت دیگر طریقوں سے چیک کیاجائے گا، جو نمبر مسلسل بند پائے جائیں گے ان کی ممبرشپ بلاک کردی جائے گی ، تسنیم نورانی نے مزید کہاکہ پی ٹی آئی الیکشن کمیشن نے ممبر شپ کو چیک کرنے کے مختلف ٹیکنیکل طریقے وضع کئے ہیں جن سے جعلی ممبر شپ پر قابو پایا جائے گا۔
تسنیم نورانی نے کہاکہ جعلی ممبر شپ کروانے والوں کی ممبرشپ کینسل کر دی جائے گی اور انکے پیچھے کارفرمالوگوں کو الیکشن کمیشن کے قوانین اورضابطہ اخلاق کے مطابق تین قسم کی سزائیں بھی ہوسکتی ہیں جن میں انٹراپارٹی الیکشن کے لئے نااہل قرار دینا ، پارٹی ٹکٹ سے محرومی اور پارٹی ممبرشپ کا ختم ہونا شامل ہیں، چیف الیکشن کمشنر نے پی ٹی آئی کے تمام کارکنان اور رہنماؤں کو مشورہ دیا کہ وہ اپنا وقت اور وسائل صحیح سمت میں استعمال کرتے ہوئے جائز ممبرسازی کو یقینی بنائیں تاکہ صاف اور شفاف انٹراپارٹی الیکشن کا انعقاد ہوسکے۔
ترجمان الیکشن کمیشن


 






Note :- All Nidokidos friends are requested to like our facebook Page