کل شام ایک بڑے سٹور سے کچھ سامان خرید کر باہر نکلا تو ڈیپارٹمنٹل سٹور کے بالکل ساتھ باہر ایک چھوٹا سا ٹھیلہ تھا جس پر ایک شخص ڈرائی فروٹ بیچ رہا تھا۔
گاڑی میں سامان رکھ کر میں نے سوچا کہ اس سے زرا قیمتیں چیک کی جائیں۔ پاراچنار کی مونگ پھلی 320 روپے کلو اور گوجر خان کی 300 روپے کلو دے رہا تھا۔ دیسی گھی کے مشہور ریوڑھیوں کے برانڈ کی قیمت پوچھی تو آدھا کلو کے پیکٹ کی قیمت 320 روپے بتائی۔
میں چونکہ ہر ہفتے بعد ڈرائی فروٹ خریدتا رہتا ہوں، مجھے قیمتوں کا اندازہ تھا۔ میں نے بڑی سختی سے اسے کہا کہ وہ مارکیٹ ریٹ سے زیادہ بتا رہا ھے، جبکہ مجھے فلاں سٹور سے ہر چیز 20، 25 روپے کم پر مل رہی ھے۔
اس نے بڑے تحمل سے میری بات سنی اور جواب دیا:
"صاحب جی، وہ سٹور بہت بڑا ھے، اس کی روزانہ کی سیل لاکھوں میں ھے، وہ اگر قیمت کم بھی کردے گا تو جتنی سیل ہوتی ھے، اس کے روزانہ کے منافع میں کوئی کمی نہیں آتی۔ میں ایک غریب دکاندار ہوں۔ سڑک کے کنارے بیٹھا ہوں، میری روز کی سیل ہزار، دو ہزار یا 3 ہزار کی ہوگی، جس میں سے مجھے زیادہ سے زیادہ 500 روپے بچیں گے۔ اگر میں اپنا منافع کم کردوں تو گھر خالی ہاتھ ہی جاؤں گا"
اس کی باتیں سن کر مجھے سخت شرمندگی کا احساس ہوا۔ سرمایہ دارانہ نظام اور اسلامی نظام میں یہی فرق ھے کہ اسلام میں مارکیٹ فورسز قمیتوں کا تعین نہیں کرتیں بلکہ خریدنے اور بیچنے والوں کے حالات کو بھی دیکھا جاتا ھے۔
میں نے اس ٹھیلے والے سے مونگ پھلی، اخروٹ اور ریوڑھیاں خرید لیں۔ اس نے ڈسکاؤنٹ آفر کی لیکن میں نے لینے سے انکار کردیا۔
واپسی میں گاڑی چلاتے ہوئے میرا ذہن اس کی باتوں کی طرف لگا رہا۔ اگر ہم افورڈ کرسکتے ہیں تو کوشش کرنی چاہیئے کہ چھوٹے دکانداروں سے خریداری کیا کریں۔ بڑے بڑے ڈیپارٹمنٹل سٹورز کو تو اللہ نے پہلے ہی بہت دیا ھے، ان کے منافع میں کمی نہیں آئے گی، لیکن اگر ہم چھوٹے دکانداروں کا خیال رکھنا شروع کردیں تو شاید وہ بھی بے ایمانی کرنا چھوڑ دیں۔
ہر انسان اپنی نیچر کے حساب سے ایک اچھا انسان ہوتا ھے۔ اسے برا حالات بناتے ہیں، میرے اور آپ جیسے لوگ بناتے ہیں، اپنے لئے 20 روپے سستی مونگ پھلی خریدنے کیلئے 100 روپے کا پٹرول خرچ کر بڑے سٹور پر جانے والے بناتے ہیں۔
جن لوگوں کو اللہ نے کم دیا ھے، ان کا خیال رکھیں۔ کیونکہ ان کی اللہ سے کوئی دشمنی تو ھے نہیں، اللہ نے انہیں کم اور آپ کو زیادہ اسی لئے دیا ھے کہ وہ دیکھ سکے کہ آپ اس آزمائش پر پورا اترتے ہیں یا نہیں

Name:  kareena kapoor magnum (2).jpg
Views: 1380
Size:  137.3 KB