Name:  aa.jpg
Views: 349
Size:  72.3 KB


آج میں جس ٹرین میں سفر کرہا تھا اس کے سامنے آکر ایک غریب سبزی فروش نے نامساعد حالات سے تنگ آکر خود کشی کی کوشش کی ساتھ ہی روڈ پر اسکی سبزی والی گدھا گاڑی کھڑی تھی ٹرین ڈرائیور کے بقول وہ شخص کود کر ٹرین کے سامنے آیا اس سے یہی لگتا ہے کہ اس نے خود کشی کی کوشش کی . جب اسے ٹرین کے نیچے سے نکالا گیا اسکی سانسین چل رہی تھیں شدید زخمی ہوگیا . ٹرین میں موجود پولیس اہلکار کاغذی کاروائی کرنے پر بضد تھے ایک رکشہ والے کو روک کر اس میں رکھا گیا لیکن اتنی بھیڑ میں سے کوئی بھی ساتھ جانے کو تیار نہ تھا رکشہ والا کہ رہا تھا کہ اگر یہ راستہ میں مر گیا تو میں غریب آدمی ہوں پھنس جاؤں گا چناچہ چارو ناچار ان دو اہلکاروں میں سے ایک اس رکشہ میں ساتھ گیا اس دوران تقریبا بیس منٹ ضائع ہوگئے. دوسرا اہلکار ٹرین میں واپس آیا لوگوں کی لعنت ملامت سن کر گویا ہوا. کچھ اونچ نیچ ہوجائے تو ہمارے سر پڑتی ہے اتنی بھیڑ میں سے کوئی ساتھ جانے کوتیار نہ تھا. ایک طرف شدید زخمی شخص دوسری طرف قانون کے رکھوالے اور سیکڑوں لوگوں کا مجمع ہر کوئی اپنی فکر میں مبتلاء . اور میں سوچ رہا تھا یہ سسٹم ہی ایسا ہے جسکے آگے ساری ہمدردیاں مصبت دیکھ پتلی گلی سے نکل جاتی ہیں......!!