Name:  12038536_446693392184213_8732175353968825233_n.jpg
Views: 136
Size:  19.6 KB
رستم زماں و رستم ہند گاما پہلوان کے بارے میں آپ نے ضرور سن رکھا ہوگا لیکن شاید آپ یہ نہیں جانتے کہ وہ پاکستان کی خاتون اول بیگم کلثوم نواز کے نانا بھی تھے۔
بیگم کلثوم نواز کے خاندان کی مشہور ترین شخصیات میں سے گاما پہلوان نمایاں ترین ہیں جو اپنے دور کے عظیم ترین پہلوان تھے اور صرف برصغیر ہی نہیں بلکہ پوری دنیا میں عظیم فاتح کے طور پر جانے جاتے تھے۔ نصف صدی پر محیط کیریئر میں دنیا کا کوئی ایک بھی پہلوان انہیں شکست دینے میں کامیاب نہ ہوسکا۔
دس سال کی عمر میں فن پہلوانی کا آغاز کرنے والے غلام محمد عرف گاما پہلوان کو اس کمسنی میں ہی مہاراجہ جودھ پور نے ساری ریاست سے آنے والے پہلوانوں میں فاتح قرار دیا۔ 1910ءتک وہ بھارت کے تمام بڑے پہلوانوں کو شکست دے چکے تھے جس کے بعد انہوں نے انگلینڈ کا سفر کیا اور وہاں ریسلنگ کے عالمی چیمپیئن سٹینس لاس زبسکو کو عبرتناک شکست دی۔ اس فتح کے بعد انہیں جان بل بیلٹ سے نوازا گیا اور وہ رسم زماں بن گئے۔ انگلینڈ سے واپسی کے بعد انہوں نے سات فٹ قد کے مالک بھارتی چیمپیئن رحیم بخش سلطانی والا کو شکست دے کر رستم ہند کا اعزاز بھی حاصل کرلیا۔ پاکستان بننے کے بعد وہ لاہور آگئے اور اسی شہر میں مئی 1960ءمیں جہان فانی سے کوچ کرگئے۔
یہ بات قابل ذکر ہے کہ وہ اپنی زندگی میں کوئی مقابلہ نہیں ہارے اور بروس لی انہیں اپنا استاد مانتے تھے۔وکی پیڈیا کا کہنا ہے کہ بروس لی گاما پہلوان کو اپنا استاد مانتے تھے اور ان کی ورزشوں کی مدد سے اپنے آپ کو مضبوط بنایا کرتے تھے۔