کراچی : پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما و رکن قومی اسمبلی اسد عمر نے کہا ہے کہ خیبر پختو نخواہ حکومت پیسکو کا مکمل کنٹرول لینے کو تیار ہے ، وفاقی حکومت معاہدے کے تحت بجلی رائلٹی کی مد میں 108ارب روپے کی خیبر پختونخواہ حکومت کی مقروض ہے جو وفاقی حکومت ادائیگی کی پابند ہے ۔ حکومتی وہ تمام ادارے تحریک انصاف لینے کے لیے تیار ہے جو حکومت چلانے میں ناکام ہوگئی ہے ۔ وہ پارٹی کے مرکزی میڈیا سیل کراچی میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے ۔ اس موقع پر رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر عارف علوی ، مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل عمران اسماعیل ، میڈیا کوآرڈینیٹر جمال صدیقی ، سبحان علی ساحل ، دوا خان صابربھی موجود تھے۔ اسد عمر نے وزیر دفاع کی پیشکش کی تیکنیکل تفصیلات بتا تے ہوئے کہا کہ کے پی کے میں بجلی کی پیداوار پر وفاق ایک معاہدے کے تحت سالانہ 7.5ارب روپے رائلٹی دینے کی پابند ہے مگر ابھی تک ادا نہیں کیے گئے ہیں ۔ پیسکو کی بجلی کی پیداوار میں تیکنیکی خامیوں کے سبب 20فیصد بجلی ضائع ہوجاتی ہے جبکہ بجلی چوری ،لوڈ شیڈنگ اور بجلی مہنگی ہونے کا سبب بنتی ہے ۔ تحریک انصاف جدید ٹیکنالوجی سے بجلی کے ضیاع اور چوری کی روک تھام کے کو یقینی بناسکتی ہے اور لوڈ شیڈنگ کو ختم کر کے سستی بجلی ممکن بناسکتی ہے اگر وزیر دفاع سیاسی پوائنٹ اسکورنگ سے ہٹ کر واقعی سنجیدہ ہیں تو وہ وفاقی سطح پر ایک کمیٹی تشکیل دیں ، تحریک انصاف پیسکو سمیت باقی تمام ادارے بھی لینے کے لیے سنجیدہ ہے جو حکومت نہیں چلا پارہی ۔ اسد عمر نے کہا کہ وفاقی حکومت پیسکو کی جنریشن ، ٹرانسمیشن اور ڈسٹری بیوشن کے پی کے حکومت کے حوالے کر ے ہم وفاقی سے بہتر انداز میں چلا کر دکھائیں گے ۔ اس حوالے سے بہت جلد چیف منسٹر کے پی کے پرویز خٹک وفاقی حکومت کو ایک خط بھجیں گے ۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ وفاقی وزیر مملکت پانی و بجلی غیر سنجیدگی سے معاملات کو حل کرنے کے بجائے بردباری کا مظاہرہ کریں اور وفاق کو بہتر تجاویز دیں ،صوبوں کے ساتھ اس قسم کے متعصبانہ رویہ خود وفاقی حکومت کے لیے نقصان دہ ہے


 


Name:  1506798_611100572260484_1767574851_n.jpg
Views: 97
Size:  85.0 KB