لوگ کہتے ہیں حادثہ ایک دم نہیں ہوتا
وقت کرتا ہے پرورش برسوں
پر یہ حادثہ دل کیسا حادثہ ہے
جس کو ہوئے گذر گئے برسوں
پھر بھی ایسا لگتا ہے اے ہم دم
جیسے ہوا ہے یہ کل یا پرسوں

رابعہ اقبال رابی