Results 1 to 2 of 2

Thread: خط میں لکھے ہوئے رنجش کے کلام آتے ہیں

  1. #1
    Member Array carefree's Avatar
    Join Date
    Feb 2012
    Posts
    3,505
    Country: Canada
    Rep Power
    9

    خط میں لکھے ہوئے رنجش کے کلام آتے ہیں

    خط میں لکھے ہوئے رنجش کے کلام آتے ہیں
    کس قیامت کے یہ نامے مرے نام آتے ہیں

    ... تابِ نظارہ کسے دیکھی جو ان کے جلوے
    بجلیاں کوندتی ہیں جب لبِ بام آتے ہیں

    تو سہی حشر میں تجھ سے جو نہ یہ کہوا دوں
    دوست وہ ہوتے ہیں جو وقت پہ کام آتے ہیں

    رہروِ راہِ محبت کا خدا حافظ ہے
    اس میں دو چار بہت سخت مقام آتے ہیں

    وہ ڈرا ہوں کہ سمجھتا ہوں یہ دھوکا تو نہ ہو
    اب وہاں سے جو محبت کے پیام آتے ہیں

    صبر کرتا ہے کبھی اور تڑپتا ہے کبھی
    دلِ ناکام کو اپنے یہی کام آتے ہیں

    نہ کسی شخص کی عزت نہ کسی کی توقیر
    عاشق آتے ہیں تمہارے کہ غلام آتے ہیں

    رسمِ تحریر بھی مٹ جائے یہی مطلب ہے
    اُن کے خط میں مجھے غیروں کے سلام آتے ہیں

    وصل کی رات گذر جائے نہ بے لطفی میں
    کہ مجھے نیند کے جھونکے سرِ شام آتے ہیں

    گریہ ہو، نالہ ہو، حسرت ہو کہ ارمانِ وصال
    آنے والی تری فرقت میں مدام آتے ہیں

    داغ کی طرح سے گُل ہوتے ہیں صدقے قربان
    بہرِ گل گشت چمن میں جو نظام آتے ہیں


     





  2. #2
    Member Array Broken_Tears's Avatar
    Join Date
    Sep 2009
    Location
    New Delhi
    Posts
    473
    Country: India
    Rep Power
    0
    nice one...dag dehlvi....

Thread Information

Users Browsing this Thread

There are currently 1 users browsing this thread. (0 members and 1 guests)







Similar Threads

  1. Replies: 0
    Last Post: 02-05-2013, 02:11 PM
  2. Replies: 2
    Last Post: 01-31-2013, 09:09 PM
  3. Replies: 2
    Last Post: 01-22-2013, 02:29 PM
  4. Replies: 0
    Last Post: 12-28-2012, 04:07 PM
  5. Replies: 2
    Last Post: 07-06-2012, 04:59 PM

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •  



Get Daily Forum Updates

Get Most Amazing E-mails Daily
Full of amazing emails daily in your inbox
Join Nidokidos E-mail Magazine
Join Nidokidos Official Page on Facebook


Like us on Facebook | Get Website Updates | Get our E-Magazine