کون آيا ہے ميرے پہلو ميں خواب آلودہ
زلف برہم زدہ و چشم حجاب آلودہ
آہ يہ زلف ہے يا ابر سر مئے جامے
آہ يہ آنکھ ہے يا جام شراب آلودہ

... کس کے ملبوس سےآتي ہے حنا کي خوشبو
کس کے ہرسانس کي جنبش ہے گلاب آلودہ
کس کو شکوہ ہےمرے عشق سےرسوائي کا
کس کا لہجہ ہے بايں لطف عتاب آلودہ

پھر ہم آغوشي کو موسم نےبکھيرے گيسو
پھر فضائيں نظر آتي ہيں سحاب آلودہ