‎''مجھے کیا چاہئے ہے '' (نثری نظم )

مجھے روشنی چاہئے ہے
بوند ،دو بوند ،بس تھوڑی سی روشنی
جس سے میں ایک سورج بنا سکوں
... نرم ،روشن ،آنسوؤں جیسا سورج

نہیں !،مجھے چھاؤں چائیے ہے
ایک قدم ،دو قدم ،بس تھوڑی سی چھاؤں
جس کے تلے میں ایک نیند کا بستر بنا سکوں
آرام دہ ،نرم ،خوابوں سے بھرا بستر

نہیں ! مجھے لفظ چاہئے ہیں
دو ،تین ،بس تھوڑے سے لفظ
جن سے میں اسکے نام کو بار بار لکھ سکوں
خوبصورت ،با معانی،اور مختصر نام

نہیں ! مجھے سانس چاہئے ہے
ایک گھڑی،دو گھڑی،بس تھوڑی سی سانس
جسے لے کے میں اسکا مزید انتظار کر سکوں
طویل،بے سود مگر ضروری انتظار

نہیں ! مجھے روٹی چاہئے ہے
ایک ٹکڑا ،دو ٹکڑے بس تھوڑی سی روٹی
جسے کھا کے میں اپنی طرف سفر کر سکوں
کٹھن ، اذیت ناک اور قدیم سفر


 


نہیں ! مجھے دعا ئیں چائیے ہیں
،دو ،تین ،بس تھوڑی سی دعا ئیں
جن سے میں اپنی بہشت بنا سکوں
خوبصورت ، ماؤں جیسی اداسی بھری بہشت


نہیں ! مجھے یہ سب چاہئے ہے
روشنی،چھاؤں ،لفظ ،سانس،روٹی اور دعا ئیں
جن سے میں ایک دنیا بنا سکوں
اپنے رنگوں ،اپنے خوابوں ،اپنے لوگوں جیسی دنیا
.................................................. .